عمر گل کے 20 سالہ پروفیشنل کیریئر کا سورج غروب ہوگیا

لاہور :عمر گل کے 20 سالہ پروفیشنل کیریئر کا سورج غروب ہوگیا۔ میچ کے بعد گفتگو کے دوران ریٹائرمنٹ کے حوالے سے بات کرتے ہوئے عمر گل کئی بار آبدیدہ ہوئے اور اپنے جذبات پر قابو نہ رکھ سکے۔ انہوں نے کہا کہ وہ کرکٹ چھوڑنا نہیں چاہتے تھے لیکن ایک دن سب نے جانا ہے ، یہ ایک مرحلہ ہے جس سے سب کو گزرنا ہوتا ہے۔اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹس پر عمر گل نے پیغام میں لکھا کہ بہت سوچ سمجھ کر کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا فیصلہ کیا۔ ہمیشہ پاکستان کے لئے دل سے کھیلا اور اپنی 100 فیصد کارکردگی دی۔ کرکٹ ہمیشہ سے میری محبت اور جنون ہے اور رہے گا۔

عمر گل نے پیغام کے ذریعے پاکستان کرکٹ بورڈ، کوچز اور اپنے کرکٹ کیریئر کے دوران ساتھ رہنے والوں کا شکریہ ادا کیا۔فاسٹ بالر نے خصوصی طور پر میڈیا اور اپنے مداحوں کا بھی شکریہ ادا کیا۔36 سال کی عمر میں کرکٹ کو الوداع کہنے والے عمر گل نے قومی ٹی ٹونٹی میں آخری بار بلوچستان کی نمائندگی کی۔ عمر گل کو میچ کے اختتام پر بلوچستان اور پنجاب کی ٹیم کے کھلاڑیوں نے گارڈ آف آنر بھی پیش کیا۔ دوسری جانب پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان سرفراز احمد نے عمر گل کے شاندار کرکٹ کیریئر کی تعریف کرتے ہوئے انہیں مبارکباد دی۔عمر گل نے 47 ٹیسٹ میچوں میں 163 ، 130 ون ڈے انٹرنیشنل میچز میں 179 اور 60 ٹی ٹونٹی بین الاقوامی میچوں میں 85 وکٹس حاصل کی ہیں۔ عمر گل نے پاکستان کے لئے ٹیسٹ ڈیبیو بنگلادیش کےخلاف اگست 2003ء میں کیا تھا جب کہ انہوں نے پہلا انٹرنیشنل ون ڈے میچ زمبابوے کے خلاف اپریل 2003ء میں کھیلا تھا۔ عمر گل نے پاکستان کے لئے پہلا انٹرنیشنل ٹی ٹوئنٹی میچ کینیا کے خلاف ستمبر2007ء میں کھیلا تھا۔

شیئر کریں