گزشتہ 4سال سی پیک منصوبے تعطل کا شکار

اسلام آباد:وزیراعظم محمدشہباز شریف نے کہا ہے کہ قوم ملکی ترقی کے دشمنوں کو پہچان گئی ہے،گزشتہ چار سال میں سی پیک منصوبوں کو دانستہ طور پر تعطل کا شکار کیا گیا،ترقیاتی منصوبوں کو ترجیحی بنیادپر مکمل کیا جائے گا۔وزیراعظم آفس کے میڈیاونگ سے جاری بیان کے مطابق ان خیالات کا اظہارانہوں نے چائنا روڈ اینڈ برج کارپوریشن کے نائب صدر ژی چنگیان (Ye Chengyin) کی سربراہی میں وفد سےگفتگوکرتے ہوئے کیا جنہوں نے جمعرات کو یہاں ان سے ملاقات کی۔ اس موقع پر وفاقی وزیرِ منصوبہ بندی احسن اقبال، معاونینِ خصوصی جہانزیب خان، ظفرالدین محمود موجود جبکہ وفاقی وزیرِ سمندری امور سید فیصل سبزواری بذریعہ وڈیو لنک موجود تھے۔اس موقع پروزیراعظم نے کہاکہ حکومت ترجیحی بنیادوں پر چین پاکستان اقتصادی راہداری کے منصوبوں کو مکمل کر رہی ہے۔گزشتہ چار سال میں سی پیک منصوبوں کو دانستہ طور پر تعطل کا شکار کیا گیا۔ قوم ملکی ترقی کے دشمنوں کو پہچان گئی ہے۔ وزیرِ اعظم نے کہا کہ ہم ملک و قوم کے پیسے کی حفاظت کیلئے عوام کو جوابدہ ہیں۔ حکومت ترقیاتی منصوبوں میں شفافیت کو یقینی بنا رہی ہے۔ترقیاتی منصوبوں خاص کر عوامی نوعیت کے منصوبوں کو ترجیحی بنیادوں پر مکمل کیا جائے گا۔ پاکستان اور چین دیرینہ دوست ہیں جن کے برادرانہ تعلقات دہائیوں پر محیط ہیں۔ چین نے پاکستان کا ہر مشکل وقت میں ساتھ دیا ہے۔ حالیہ سیلاب اور بارشوں کے دوران چین کے تعاون پر مجھ سمیت پوری قوم صدرشی جن پنگ اور چینی عوام کی شکر گزار ہے۔وزیرِ اعظم شہباز شریف نے سی پیک کے تحت منصوبوں کو ترجیحی بنیادوں پر مقررہ مدت میں مکمل کرنے کی ہدایت کی۔ ملاقات میں وزیرِ اعظم کو مختلف جاری و مکمل شدہ میگا پراجیکٹس پر تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ اس موقع پر وزیراعظم کو بتایا گیا کہ قراقرم ہائی وے۔ ٹو کےحویلیاں تا تھاکوٹ سیکشن کو مکمل کرلیا گیا ہے جس پر ٹریفک رواں دواں ہے جبکہ اس کے فیز ۔ٹو تھاہ کوٹ تا رائے کوٹ پر بھی کام شروع ہے۔ کراچی کوسٹل ڈویلپمنٹ پراجیکٹ، رشکئی سپیشل اکنامک زون، کراچی حیدرآباد موٹروے M9، بابوسر ٹنل،ایم ایل ۔1اور کراچی پورٹ ٹرسٹ تا PIPRI ریلوے کوریڈور کے منصوبوں پر بھی پیش رفت سے تفصیلی طور پر آگاہ کیا گیا۔وزیراعظم کو بتایاگیاکہ سی آر بی سی وزیرِ اعظم کے سی پیک کے منصوبوں کو ترجیحی بنیادوں اور مقررہ مدت کے اندر مکمل کرنے کے اقدامات کا خیر مقدم کرتی ہے، اس کے علاوہ سی آر بی سی نے 10 ہزار میگاواٹ کے سولرائیزیشن کے منصوبے میں سرمایہ کاری میں گہری دلچسپی کا اظہار کیا۔اس موقع پر وائس پریزیڈنٹ سی آر بی سی نے وزیرِ اعظم شہباز شریف کو سیلاب زدگان کی مدد کے طور پر وزیرِ اعظم فلڈ ریلیف فنڈ کیلئے 1 لاکھ ڈالر کا چیک بھی پیش کیا۔وزیرِ اعظم نے متعلقہ حکام کو ان منصوبوں کے حوالے سے تمام ضروری اقدامات کو جلد مکمل کرکے ان پر کام شروع کرنے کی ہدایات جاری کیں۔

شیئر کریں