خیرپور میں 7 سالہ بچی زیادتی کے بعد قتل، ٹویٹر صارفین نے انصاف کا مطالبہ کر دیا

خیرپور : صوبہ سندھ میں پیر جو گوٹھ کے علاقہ میں سفاک ملزمان نے 7 سالہ بچی مونیکا لاڑک کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد موت کے گھاٹ اتار دیا۔ دو روز قبل لاپتہ ہونے والی بچی کی لاش کھیتوں سے برآمد ہوئی۔ پوسٹ مارٹم رپورٹ کے مطابق بچی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد گلا دبا کر قتل کیا گیا ۔بچی کا تعلق غریب گھرانے سے ہے اور وہ گھروں میں جھاڑو پوچھے کا کام کرتی تھی اور کام سے واپس آتے ہوئے اغوا ہوئی تھی۔ مونیکا لاڑک کے ساتھ کی جانے والی زیادتی اور اس کے بہیمانہ قتل کے خلاف ٹویٹر صارفین بھی کُھل کر سامنے آ گئے ہیں اور اس افسوسناک واقعہ کے خلاف اپنا احتجاج ریکارڈ کروانے کے ساتھ ساتھ مونیکا لاڑک کے لیے انصاف کا مطالبہ بھی کر رہے ہیں۔مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر مونیکا لاڑک کی کھیتوں سے برآمد ہونے والی لاش کی تصویر آئی تو صارفین نے اس واقعہ میں ملوث ملزمان کی سر عام پھانسی کا مطالبہ بھی کیا اور مونیکا کو انصاف دلوانے کے لیے ٹویٹر پر ایک ٹرینڈ جسٹس فار میمونہ لاڑکبھی بنایا گیا جو دیکھتے ہی دیکھتے ٹویٹر پر ٹاپ ٹرینڈ بن گیا ہے۔

شیئر کریں