پاکستان یورپی یونین کے رکن ممالک کے ساتھ اپنےتاریخی اور تعاون پرمبنی دوطرفہ تعلقات کوبہت اہمیت دیتا ہے،وزیراعظم شہبازشریف

اسلام آباد:وزیراعظم شہبازشریف نے کہا ہے کہ پاکستان یورپی یونین کے رکن ممالک کے ساتھ اپنےتاریخی اور تعاون پرمبنی دوطرفہ تعلقات کوبہت اہمیت دیتا ہے، پاکستان اور یورپی یونین کے مابین شراکت داری کو مزید مستحکم بنانے کے لئے اعلیٰ سطح کے تبادلوں کی ضرورت ہے، پر امن اور مستحکم افغانستان خطے کے لئے اہم ہے۔ وزیراعظم آفس کے میڈیاونگ سے جاری بیان کے مطابق پاکستان میں یورپی یونین کی نئی تعینا ت ہونےوالی سفیر ڈاکٹرریناکونیکا نے جمعرات کو وزیراعظم سے ملاقات کی۔اس موقع پر وزیراعظم نے یورپی یونین کونسل کے صدر چارلس مشیل اور یورپی کمیشن کی صدر ارسولاوان ڈیرلیین کے ساتھ اپنی حالیہ ٹیلیفونک گفتگو کا حوالہ دیتے ہوئے اس اعتماد کا اظہارکیا کہ یورپی یونین کے پارلیمانی وفود کے پاکستان کے آئندہ دوروں کےساتھ ساتھ اگلے یورپی یونین پاکستان تزویراتی بات چیت کے منصوبے کے تحت سیاسی اور سکیورٹی ڈائیلاگ سے دونوں فریقین کےدوران مزید ٹھوس تعاون کی راہ ہموار ہوگی ۔انہوں نے کہاکہپاکستان اور یورپی یونین کے درمیان باہمی فائدہ مند تجارتی تعلقات میں اضافے کا سہرا موجودہ جی ایس پی پلس سکیم کے سر ہے۔ انہوں نے امید ظاہرکی کہ پاکستان 2023 کےبعد بھی اس انتظام کا حصہ رہے گا۔وزیراعظم نے بڑھتی ہوئی شراکت داری کو مستحکم کرنے کے لئے مسلسل اعلیٰ سطح کے تبادلوں کی اہمیت پر بھی زور دیا۔ رواں سال پاکستان اور یورپی یونین کے تعلقات کے 60 سال مکمل ہونے پر وزیراعظم نے اس سنگ میل کو دونوں اطراف سے مناسب طریقے سے منانے پر زور دیا۔وزیراعظم نے کہا کہ پرامن اور مستحکم افغانستان اہم ہے۔ پاکستان نے گزشتہ سال اگست کی پیشرفت کے بعد افغانستان کے حوالے سے بین الاقوامی برادری کو بے مثال تعاون فراہم کیا ہے۔ڈاکٹررینکا کونیکا نے وزیراعظم کی جانب سے خیر مقدم پرشکریہ ادا کرتےہوئے کہا کہ وہ پاکستان میں اپنی تعیناتی کے دوران دو طرفہ تعلقات کو مزید مستحکم بنانے کے لئے بھرپور کرداراداکریں گی۔

Spread the love