صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کی افغان طلباء کو تعلیمی سہولتیں دینے کی پیشکش

اسلام آباد:صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی اور ورچوئل یونیورسٹی آف پاکستان کے ذریعے افغانستان کے طلباء کو ورچوئل اور آن لائن تعلیم کی سہولیات فراہم کرنے کی پاکستان کی پیشکش کا اعادہ کیا ہے، صدر مملکت نے اس سے پہلے یہ پیشکش افغانستان کے وزیر تعلیم سے ملاقات کے دوران کی تھی۔ایوان صدر کے پریس ونگ سے جاری بیان کے مطابق صدر مملکت نے مفتی تقی عثمانی کے دورہ افغانستان اور اعلیٰ افغان قیادت سے ملاقات کی خبر پر مفتی تقی عثمانی سے ٹیلی فون پر رابطہ کیا۔ صدر نے کہا کہ افغانستان میں ملک گیر انٹرنیٹ کنیکٹویٹی نہیں ہے، اس لئے ابتدائی طور پر علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی اور ورچوئل یونیورسٹی آف پاکستان کے تعلیمی مواد کو اس کے ٹیلی ویژن نیٹ ورک کے ذریعے افغان طلباءو طالبات تک پہنچایا جا سکتا ہے۔صدر مملکت نے کہا کہ حکومت اور ریاست پاکستان خواتین کو مردوں کے برابر تعلیمی مواقع فراہم کرنے پر یقین رکھتی ہے، قرآن میں اقراء کا حکم کسی مخصوص جنس کیلئے مختص نہیں بلکہ سب کیلئے ہے، افغانستان کی مخصوص سماجی و اقتصادی روایات کے پیش نظر اور افغان قیادت کے وعدے کے مطابق خواتین کی تعلیم کیلئے خصوصی انتظامات کئے جا سکتے ہیں۔صدر مملکت نے کہا کہ اسلام مرد اور عورت میں تفریق کے بغیر سب کی تعلیم پر خصوصی زور دیتا ہے، باقی دنیا کے خدشات دور کرنے کیلئے افغانستان کو اپنی ترجیحات کے مطابق خواتین کو تعلیم کی فراہمی کیلئے اقدامات کو میڈیا اور مواصلات کے تمام ذرائع سے پھیلانا چاہیے۔صدر مملکت نے کہا کہ پاکستان افغانستان میں امن اور خوشحالی کا خواہشمند ہے اور انسانی وسائل کی ترقی کے بغیر یہ ممکن نہیں۔ صدر مملکت افغان سفیر، قونصل جنرلز اور دیگر حکومتی قیادت کے ساتھ ملاقاتوں کے دوران افغانستان کو ورچوئل تعلیم کی سہولیات فراہم کرنے کی پاکستان کی جانب سے پیشکش کرچکے ہیں۔

Spread the love