قبائلی عوام کے حقوق پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا،انورزیب خان

پشاور: خیبر پختونخوا کے وزیر زکوٰة وعشر ،سماجی بہبود،خصوصی تعلیم اورترقی خواتین انورزیب خان سے اراکین صوبائی اسمبلی غزن جمال اور اجمل خان نے ملاقات کی اس موقع پر اراکین اسمبلی نے وفاقی حکومت کی طرف سے نئے قبائلی اضلاع کے بجٹ پر کٹ لگانے، صحت کارڈ سے قبا ئلی عوام کو نکالنے اور ضم قبائلی اضلاع میں ترقیاتی منصوبوں اور قبائلیوں کو درپیش مسائل کے حوالے سے صوبائی وزیر کیساتھ تفصیلی بات چیت کی صوبائی وزیر انورزیب خان نے وفاقی حکومت کی طرف سے قبائلی اضلاع کے بجٹ پر کٹ لگانے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہاکہ قبائلی عوام کے حقوق پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گاماضی میں قبائلی علاقوں کو نظرانداز کیا گیا تھا لیکن اب ضم قبائلی اضلاع خیبر پختونخوا کا حصہ ہے وفاقی حکومت قبائلی عوام کو اپنے حق سے محروم نہیں کرسکتی ضم شدہ اضلاع کے لوگوں کے حقوق کے لئے ہر فورم پر آواز اٹھا ئینگے انھوں نے کہا کہ قبائلی عوام نے ملک کے استحکام کے لئے لازوال قربانیاں دی ہیں جسے فراموش نہیں کیا جاسکتا قبائلی عوام کو اپنے حق سے محروم کرنا ظلم کے مترادف ہے انہوں نے کہا کہ پچھلے 72 سالوں سے قبائلی عوام کے ساتھ ناانصافی کی جارہی تھی لیکن پاکستان تحریک انصاف قبائلی علاقوں کا صوبے میں انضمام کے بعد انکی محرومیوںاور پسماندگی کسی صورت برداشت نہیں کرینگی وفاقی حکومت کا ضم اضلاع کے بجٹ پر کٹ لگانے اور قبائلی عوام کو صحت کارڈ سہولت سے محروم کرنے پر خاموشی سے نہیں بیٹھیں گے انہوں نے مذید کہا کہ قبائلی اضلاع کی محرومی اور پسماندگی کو ختم کرنے کا وقت آگیا ہے قبائلی اضلاع کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کے لئے تمام وسائل کو بروئے کار لا ئینگی.

Spread the love