پاکستان کے برطانیہ کے ساتھ دیرینہ دوستانہ تعلقات موجود ہیں،راجہ پرویز اشرف

اسلام آباد:سپیکر قومی اسمبلی راجہ پرویز اشرف سے برطانوی ہائی کمشنر ڈاکٹر کرسچن ٹرنر نے ملاقات کی۔ملاقات میں دوطرفہ تعلقات سمیت باہمی دلچسپی کے اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔اس موقع پر سپیکر راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ پاکستان کے برطانیہ کے ساتھ دیرینہ دوستانہ تعلقات موجود ہیں، پاکستانی حکومت اور عوام برطانیہ کے ساتھ خوشگوار تعلقات کو مزید مستحکم بنانے چاہتے ہیں،ملکی معیشت کی بحالی کے لئے سیاسی اتفاق رائے ناگزیر ہے۔سپیکر نے کہا کہ موجودہ قومی حکومت نے ملک کو موجودہ معاشی چیلنجز سے نکالنے کے لیے مختلف اقدامات شروع کیے ہیں، پاکستانی قوم ایک بہادر قوم ہے اور ماضی میں ملک کو چیلنجز سے کامیابی کے ساتھ نکلا ہے،پاکستان برطانیہ کے ساتھ پارلیمانی اور اقتصادی تعاون کے ذریعے تعلقات کو مزید مستحکم بنانے کا خواہاں ہے۔سپیکر قومی اسمبلی نے کہاکہ دونوں ممالک کی پارلیمان کے درمیان بات چیت سے معیشت کے مختلف شعبوں میں موجودہ تعاون کو بڑھانے میں تیزی آئے گی،برطانیہ میں مقیم پاکستانی برطانیہ کی قومی ترقی میں اپنا کردار ادا کر رہے ہیں، اسپیکر قومی اسمبلی نے کہا کہ پاک برطانیہ پارلیمانی فرینڈ شپ گروپ متحرک ہے اور دوطرفہ تعلقات کو مضبوط بنانے میں اپنا کردار ادا کر رہا ہے،اسپیکر قومی اسمبلی نے برطانوی ارکان پارلیمنٹ کو اس سال اگست میں ہونے والی پارلیمنٹ کی ڈائمنڈ جوبلی تقریب کا حصہ بننے کی دعوت دی۔برطانوی ہائی کمشنر نے کہا کہ برطانیہ پاکستان کے ساتھ اپنے تاریخی اور دیرینہ تعلقات کو اہمیت دیتا ہے،پاکستان، برطانوی تعلقات ہر گزرتے وقت کے ساتھ مضبوط سے مضبوط تر ہوتے جا رہے ہیں۔برطانوی ہائی کمشنر نے کہاکہ ایف اے ٹی ایف کے معاملے پر ہونے والی پیش رفت قابل ستائش ہے، اسلام آباد میں یوکے ہائی کمیشن دوطرفہ اقتصادی تعاون بڑھانے میں ہرممکن تعاون فراہم کرے گا،پارلیمانی دوستی گروپس کے پلیٹ فارم سے دونوں ممالک کے مابین مضبوط پارلیمانی تعلقات کو مزید وسعت دینے کی ضرورت ہے۔

Spread the love