امریکہ و یورپ کی پاکستان میں جبری مذہب کی تبدیلی کی رپورٹس مسترد کرتے ہیں، علامہ حافظ طاہر محمود اشرفی

لاہور:وزیر اعظم کے نمائندہ خصوصی برائے بین المذاہب ہم آہنگی علامہ حافظ طاہرمحمود اشرفی نے کہاہے کہ ہم امریکہ و یورپ کی جانب سے پاکستان میں جبری مذہب کی تبدیلی کے حوالے سے رپورٹس کو مسترد کرتے ہیں متحدہ علما بورڈ اور علما کونسل کی طرف سے این جی او کو چیلنج کرتے ہیں جو بیرون ملک سے یکطرفہ رپورٹس بھجوا کر پاکستان کو بدنام کرنے کی کوشش کرتی ہیں، اگر ان کے پاس کوئی ثبوت ہے تو سامنے لائیں،وزیراعظم عمران خان نے اسلام فوبیا کے خلاف عالمی فورم پر آواز اٹھائی ہے۔ قرآن اکیڈمی میں علمابورڈ کے اجلاس کے بعد وزیر اعظم کے نمائندہ خصوصی برائے بین المذاہب ہم آہنگی علامہ حافظ طاہر محمود اشرفی نے علامہ محمد حسین اکبر ، مفتی راغب نعیمی و دیگر علما کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دنیا کو بھارت میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور ظلم و بربریت کے مناظر کیوں نظر نہیں آتے پاکستان اقلیتوں کیلئے جنت ہے،پاکستان میں بعض این جی اوز اور اینٹی پاکستان لابی مذہب کی جبری تبدیلی اور اقلیتوں کو مسلم بنانے کیلئے شادیوں پر جو پروپیگنڈا کیاجاتاہے اسے مسترد کرتے ہیں،طاہر اشرفی کاکہناتھاکہ دنیا ترقی کی جانب سے گامزن ہے لیکن اپوزیشن جماعتیں الیکٹرونک ووٹنگ مشین پر اعتراضات کررہی ہیں جو غلط ہے اگر اوورسیز پاکستانیوں کی جانب سے رقوم سے استعفادہ کرتے ہیں تو پاکستان کی تعمیر و ترقی میں انکا حصہ ڈالنے سے کیوں ہچکچاتے ہیں،او آئی سی دنیا میں مسلمانوں کے خلاف ظلم پر نوٹس لے، علامہ محمد حسین اکبر ، مفتی راغب نعیمی اور ضیا اللہ شاہ بخاری نے یو ایس کمیشن فار فریڈم کی جبری مذہب کی رپورٹ کو مسترد کرتے ہوئے کہاکہ قادیانی دنیا میں پروپیگنڈہ کرتے ہیں کہ پاکستان انہیں بطور غیر مسلم تسلیم نہیں کرتا حکومت جعلی رپورٹیں بنانے والوں کے خلاف ایکشن لے، ان کاکہناتھاکہ عوام ا ور ادارے سب متفق ہیں۔

Spread the love