پی ٹی اے کا جنوبی وزیرستان میں کوالٹی آف سروس سروے

اسلام آباد: وزیر اعظم کے جنوبی وزیرستان کے دورے کے تناظر میں 20 جنوری 2021 کو ضلع میں موبائل فون آپریٹروں (سی ایم اوز) کو متعلقہ علاقوں میں ڈیٹا سروسز کی بحالی کی ہدایات جاری کی گئیں۔ اس کے بعد25 سے 29 جنوری 2021 تک پی ٹی اے اور سی ایم اوز کی مشترکہ ٹیموں نے جنوبی وزیرستان کے علاقوں وانا، اعظم ورسک، کنئی ،کرم ، ماکن، شکئی، سراروغہ، تا نا ئی اور تیارزا میں سروس کے معیار کو جانچنے کے لئے سروے کیا۔ ان علاقوں میں فی الحال جاز (ٹو جی & تھری جی) اور یوفون (2 جی) کی خدمات دستیاب ہیں۔

سروے کے نتائج کے مطابق، جاز کی ڈیٹا سروسز کم از کم لائسنس تھریش ہولڈ کی متناسب سطح پر پائی گئی جبکہ سروے کے دوران دونوں آپریٹرز کا چند علاقوں میں آواز اور ایس ایم ایس کا معیار لائسنس میں طے شدہ معیار سے قدرے کم پایا گیا۔ اس حوالے سے سی ایم اوز کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ 15 دن کے اندر اندر نشاندہی کردہ خامیوں کے ازالے کے لئے اقدامات کریں۔ سروے میں علاقے میں ٹیلی کام انفراسٹرکچر کی توسیع کی ضرورت کے بارے میں بھی نشاندہی کی ہے۔ آپریٹرز سے نہ صرف ان سے متعلقہ خدمات کو اپ گریڈیشن کے لئے کہا جا رہا ہے (یعنی 2 جی سائٹس کو 3 جی اور 3 جی سائٹوں کو 4 جی تک بڑھانا) بلکہ مزید سائٹس کے اضافے پر بھی غور کیا جائے تاکہ صارفین کے لئے بہتر آواز اور ڈیٹا خدمات کو وزیراعظم پاکستان کی ہدایت کے مطابق بڑھایا جا سکے۔ اس حوالے سے انٹرنیٹ خدمات میں بہتری آئندہ 4 ہفتوں میں متوقع ہے۔ مزید برآں، علاقے میں فکسڈ لائن براڈ بینڈ خدمات کے دوبارہ آغاز کے لئے اقدامات جاری ہیں۔ توقع ہے کہ براڈ بینڈ خدمات کی فراہمی سے نہ صرف مقامی کمیونٹی کو فائدہ ہوگا بلکہ طلبا ء کی انٹرنیٹ کے حوالے سے ضروریات بھی پوری ہو سکیں گی۔

شیئر کریں