پاکستان یکم مئی سے ای پاسپورٹ کا آغاز کر رہا ہے، شیخ رشید احمد

اسلام آباد:وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ پاکستان نے وزارت داخلہ میں بارڈر منیجمنٹ ونگ قائم کردیا ہے، پاکستان یکم مئی سے ای پاسپورٹ کا آغاز کر رہا ہے،انسانی سمگلنگ اورمصنوعات کی غیر قانونی نقل و حمل روکنے کے حوالے سے جامع اقدامات کررہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے آسٹریلیا کے پاکستان میں ہائی کمشنر جیفری شاؤ سے گفتگو کرتے ہوئے کیا جنہوں نے ان سے ملاقات کی۔ ملاقات میں پاکستان۔آسٹریلیا دو طرفہ تعلقات اور باہمی دلچسپی کے علاوہ بارڈر مینجمنٹ کو بہتر بنانے اوراور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی پیشہ وارانہ صلاحیت بڑھانے پر بات چیت کی گئی۔ اس موقع پر وزارت داخلہ اور آسٹریلوی ہائ کمیشن کے اعلی افسران بھی موجود تھے۔ ملاقات میں وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا کہ پاکستان نے وزارت داخلہ میں بارڈر منیجمنٹ ونگ قائم کردیا ہے۔ انسانی سمگلنگ اورمصنوعات کی غیر قانونی نقل و حمل روکنے کے حوالے سے جامع اقدامات کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان یکم مئی سے ای پاسپورٹ کا آغاز کر رہا ہے۔ ای پاسپورٹ سے انسانی سمگلنگ روکنے میں بہت ملے گی۔ای ویزا کا آغاز یکم جنوری سے کرچکے۔191 ملکوں کے شہر یوں کو آن لائین ویزا دے رہے ہیں جبکہ اس سلسلہ میں افغانستان نے سب سے زیادہ درخواستیں موصول ہو رہی ہیں۔اس موقع پر آسٹریلین ہائی کمشنر نے کہا کہ پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان بین الاقوامی جرائیم کی روک تھام کے لئے تعاون بڑھانے کی ضرورت ہے۔ پاکستان کو بارڈر مینیجمنٹ کو بہتر کرنے کے لئے تکنیکی معاونت فراہم کرینگے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان نے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو جس طرح کنٹرول کیا ہے بہت قابل تعریف ہے۔ آسٹریلین ہائی کمشنر نے شیخ رشید احمد کو وزارت داخلہ کا قلمدان سنبھالنے پر مبارکباد پیش کی

شیئر کریں