ترک سرمایہ کاروں کو پاکستان کے کاروبار دوست ماحول سےفائدہ اٹھانے کی ضرورت ہے، ڈاکٹر عارف علوی

اسلام آباد:صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی سے ترکی کے وزیرِ خارجہ مولود چاوش اولونے ملاقات کی ہے، ملاقات میں پاکستان اور ترکی کے درمیان تجارت و ثقافت کے شعبوں میں دوطرفہ تعاون کو مزید فروغ دینے پر اتفاق کیا گیا۔اس موقع پر صدر مملکت نے کہا کہ کاروبار کرنے میں آسانی کی عالمی درجہ بندی میں پاکستان کی پوزیشن میں زبردست بہتری آئی ، ترک سرمایہ کاروں کو پاکستان کے کاروبار دوست ماحول سےفائدہ اٹھانے کی ضرورت ہے۔صدر عارف علوی نے مقبوضہ جموں وکشمیر پر پاکستان کی اصولی حمایت پر ترک قیادت کا شکریہ ادا کیا۔ صدر نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں ترک صدر کی حالیہ تقریر میں کشمیریوں کے حق میں آواز بلند کرنے پر شکریہ ادا کیا۔ صدر مملکت نے کورونا وائرس کی عالمی وبا سے نمٹنے میں ترکی کے عالمی کردار کی بھی تعریف کی۔ترک وزیر خارجہ نے کہا کہ ترکی پاکستان کے ساتھ تجارتی تعلقات کو بہتر بنانے کا خواہاں ہے، ترکی ترک کمپنیوں کی پاکستان میں سرمایہ کاری کے لئےحوصلہ افزائی کرتارہے گا۔ انہوں نے کہا کہ ترکی تمام بین الاقوامی فورمز پر پاکستان کی حمایت جاری رکھے گا، نگورنو کاراباخ پر آذربائیجان کی حمایت پر ترکی پاکستان کے تعاون کوسراہتا ہے۔ملاقات میں فریقین نے اسلامو فوبیا ، نفرت انگیز تقاریراور اسلام کے خلاف عدم رواداری سے نمٹنے کے لئے مشترکہ اقدامات پر مل کر کام کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔بعد ازاں صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے ترک وزیر خارجہ میولود چاوش اولوکو پاک ترک تعلقات کے استحکام کے اعتراف میں دوسرا اعلیٰ ترین سول ایوارڈ ہلال پاکستان عطا کیا۔ ایوارڈ دینے کی تقریب بدھ کی صبح یہاں ایوان صدر میں ہوئی جس میں ترک وزیر خارجہ کے ہمراہ آنے والے وفد کے علاوہ وفاقی وزرا اور سول حکام نے شرکت کی۔ تقریب کا آغاز قرآن پاک سے ہوا جس کے بعد دونوں ممالک کے قومی ترانے بجائے گئے۔ اس موقع پر سیکرٹری کابینہ ڈویژن سردار احمد نواز سکھیرا نے دو طرفہ تعلقات کے استحکام کے لئے ترک وزیر خارجہ کی خدمات کو اجاگر کیا۔

شیئر کریں