پی ٹی ایم بھی تحریک طالبان اور بی ایل اے کی نقش قدم پر چل پڑی

پختون تخفظ موومنٹ(پی ٹی ایم)ہمارے دشمن بھارت کی زبان بول رہے ہیں اور ایسی زبان پاکستان میں ناقابل قبول ہے،پی ٹی ایم کی تقاریر اشتعال انگیزی کی آخری حدوں کو چھو رہی ہیں اور وہ پاکستان میں پختون قوم کو افغانستان کی پرچم کو سرعام لہرانے اور سیکورٹی اداروں کے خلاف اعلان جنگ کی ترغیب دے رہے ہیں۔گزشتہ دن صوبہ بلوچستان کے علاقہ چمن میں پی ٹی ایم کے زیر اہتمام ایک جلسے کا انعقاد ہوا جس میں پختون تحفظ موومنٹ کے سربراہ منظورپشتین نے بھی شرکت کی اس موقع پر جلسے سے خطاب کرتے ہو ئے پی ٹی ایم کے ایک مہاجر رکن نے پختون نوجوانوں کو مخاطب کرتے ہو ئے کہا کہ پی ٹی ایم نے تمام محب وطن پشتونوں کی ایک فہرست تیار کی ہے جو سب کو ننگا کر مار دینگے،اگر آپ پرامن رہنا چاہتے ہیں تو پاک آرمی اور حساس اداروں کو گالیاں دیں چوکوں چوراہوں میں انھیں خوب سنائیں اور انکے سرکاری دفاتر جلا ئے،انہوں نے الزام لگایا کہ تمام سرکاری اداروں کے دفاتر چکلوں میں تبد یل ہو چکی ہے،نوجوانوں کو ڈرنے کی کو ئی ضرورت نہیں پی ٹی ایم آپکی ساتھ کھڑی ہے انہوں نے کہا کہ پشتونوں کا اصل دشمن کو ئی اور نہیں صرف پاکستان کی سیکیورٹی ادارے ہیں ،انہوں نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ پشتون قوم مشترکہ طور پر پاکستانی سیکیورٹی فورسز کے خلاف اٹھے اور ان پر لعنت بھیجیں،چمن بارڈر پر کسی بھی سیکورٹی اہلکار نے کسی اسمگلر کو روکا تو آپکا فرض بنتا ہے کہ سیکورٹی اہلکار کو زندہ مت چھوڑیں۔انہوں نے کہا کہ پشتونوں کو چاہیئے کہ وہ سر کاری دفاتر میں موجود افسران کو اٹھاکر باہر پھینکے اور کسی سرکاری دفتر کو بغیر جلائے نہ چھوڑیں۔واضح رہے کہ چمن جلسے میں افغانی پرچم لہرانے سے یہ ثابت ہو چکا ہے کہ پی ٹی ایم افغانستان اور ہندوستان کی اشاروں پر چل رہا ہے،پی ٹی ایم سے قبل تحریک طالبان پاکستان نے بندوق کی نوک پر ریاست پاکستان اور ریاستی اداروں کے خلاف ہتھیار اٹھائے تھے ،اور لوگوں کو یہ باور کرایا کیا تھا کہ پاکستان ایک ناجائز ملک ہے اور اس کے خلاف لڑنا جہاد ہے۔ اسی طرح بلوچستان میں بین الاقوامی دہشت گرد تنظیم بی ایل اے بھی پاکستان اور سکیورٹی ایجنسیوں کے خلاف دشمن ممالک بھارت اور افغانستان کی مدد سے لڑر ہے ہیں، چمن میں پختون تحفظ موومنٹ کے جلسے میں افغان پرچم لہرانا اور اس کے بعد پاکستانی ریاست ، ریاستی اداروں اور ضلعی انتظامیہ کے خلاف گالیاں دینا واضح ثبوت ہیں کہ پی ٹی ایم۔بی ایل اے اور ٹی ٹی پی کا کام اور زبان ایک ہے جو اس ملک کے خلاف کام کر رہی ہے۔

شیئر کریں