پی ٹی ایم یہ جو دہشتگردی ہے اس کے پیچھے آسٹریلین وردی ہے کے نعرے کب لگایگی؟ یا پھر اس کے پیسے نہیں ملتے؟

آسٹریلیا :ایک عرصے تک افغانستان میں روس اور پھر امریکہ نے ڈیرے جمائے رکھے اور اس جنگ میں ہزاروں لاکھوں لوگ موت کے منہ میں چلے گئے اور سینکڑوں اپاہج بھی ہوئے۔اس نام نہاد جنگ میں ہزاروں داستانیں رقم ہوئیں جن میں مقامی آبادی پر ڈھائے جانے والے مظالم کا آج تک مداوا نہیں ہو سکا۔ دہائیوں بعد آج افغان جنگ کے وار کرائم کی رپورٹ جاری ہوئی جس میں تہلکہ خیز انکشافات کیے گئے۔انسپکٹر جنرل آف آسٹریلین ڈیفنس فورس کا رپورٹ میں یہ کہنا تھا کہ ہماری قوم کے لیے یہ شرم کا مقام ہے کہ ہماری سپیشل فورسز جو کہ افغان جنگ میں شامل تھیں ان افسران نے مقامی افغان لوگوں کا ناحق قتل کیا۔ فوجی افسران نے جنگی قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے نہ صرف بے گناہ لوگوں کا قتل کیا بلکہ انہیں طرح طرح کی اذیتیں بھی دیں جن کی جنگی قوانین کے علاوہ انسانی حقوق اور قوانین بھی اجازت نہیں دیتے۔انسپکٹر جنرل کا کہنا تھاکہ میرے لیے اس بات کا اعتراف جتنا مشکل ہے اتنا ہی تکلیف دہ بھی ہے کہ ہماری سپیشل فورسز کے اعلیٰ افسران افغان جنگ میں غیر قانونی کاموں میں ملوث رہے جن کے ناقابل تردید اورٹھوس شواہد بھی موجود ہیں۔تاہم انکا کہنا تھا کہ ان چند افسران کی غیر قانونی حرکتوں کی وجہ سے ہمارے سر شرم سے ضرور جھکے ہیں مگر وہ ہزاروں سپاہی جو کہ ان کے ساتھ جنگ میں شریک تھے یا آج بھی افغانستان میں ڈیوٹی کے امور انجام دے رہے ہیں اور قانون کی پاسداری کررہے ہیں اس سے ان کی تضحیک کرنا مقصود نہیں بلکہ وہ تو ہمارے لیے قابل فخر ہیں۔جبکہ ہماری حکومت کو چاہیے کہ انکوائری رپورٹ میں دی گئی تمام اصلاحات کو قبول کرے تاکہ آئندہ اس قسم کے وار کرائم جنم نہ لے سکیں۔رپورٹ میں یہ بھی بتایا گیا کہ نہ صرف افغان لوگوں کا قتل کیا گیا بلکہ خواتین کی آبروریزی سمیت بچوں کے ساتھ بھی بدفعلی کی گئی جو کہ وار کرائم کے گھٹیا ترین جرائم ہیں۔خواتین کو اذیتیں دی گئی اور مقامی لوگوں کو بلیک میل کر کے گن پوائنٹ پر ان کے ساتھ مظالم ڈھائے گئے۔انسپکٹر جنرل کی رپورٹ کے مطابق وار کرائم میں شامل افسران کے ساتھ قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی جبکہ حکومت کو بھی اس حوالے سے بہت کچھ کرنے کے مشورے دیے گئے ہیں۔یاد رہے کہ پشتون تحفظ موومنٹ آئے روز پاکستان میں فوجی آپریشن میں ہلاک ہونے والے دہشتگردوں کے حق میں کھڑے ہو کر سیکورٹی اداروں کو تنقید کا نشانہ بناکرپشتون قوم کو جھوٹے پرواپیگنڈوں کے زریعے گمراہ کررہے ہیں کہ پاکستان کے سیکورٹی ادارے بے گناہ قتل کررہے ہیں اور یہ کہہ رہے ہیں یہ جو دہشتگردی ہے اس کے پیچھے وردی ہے ؟ لر اوبر کے نعرہ لگانے والے پی ٹی ایم افغانستان میں قتل ہونے والوں بے گناہ معصوم لوگوں کے حق میں نیٹو افواج کیخلاف آواز کیوں نہیں اٹھاتے ؟ کیونکہ پاکستان کے سیکورٹی اداروں کیخلاف نعرے لگانے کے بدلے پی ٹی ایم پاکستان دشمن ممالک سے ڈالرز وصول کررہے ہیں۔

شیئر کریں