پاکستان اسٹاک مارکیٹ 5 ماہ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی

کراچی: اسٹاک مارکیٹ 5 ماہ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی، ڈالر کی قیمت واضح کمی سے 166 روپے کی سطح پر آگئی، سونے کی قیمت میں مسلسل اضافے کو بھی بریک لگ گئی۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان اسٹاک مارکیٹ، کرنسی مارکیٹ اور سونے کی مارکیٹ میں بھی مثبت رجحان دیکھنے میں آیا۔بتایا گیا ہے کہ کرونا بحران کے باجود پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں زبردست اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ 5 ماہ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ہے۔ پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں تیزی کا تسلسل برقرار رہا اور 100انڈیکس مزید 406.11پوائنٹس کے اضافے سی38627.27پوائنٹس کی بلندسطح پرپہنچ گیا۔جب کہ64.03 فی صد کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس کے سبب مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت59ارب57کروڑ27لاکھ روپے بڑھ گئی اور حصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم 36.85فیصد زائدرہا ۔انٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالر کی قدر میں55پیسے کی کمی واقع ہوئی جس سے ڈالر کی قیمت خرید 166.80روپے سے کم ہو کر166.35روپے اور قیمت فروخت167.10روپے سے کم ہو کر166.55روپے پر آگئی۔ اسی طرح مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قدر60پیسے گھٹ گئی جس سے ڈالر کی قیمت خرید 166.70روپے سے گھٹ کر166.20روپے اور قیمت فروخت167.20روپے سے گھٹ کر166.60روپے پر آ گئی۔ جبکہ عالمی منڈی میں سونا سستا ہونے سے مقامی مارکیٹ میں قیمتوں میں مسلسل اضافے کے سلسلے کو بالآخر بریک لگ گئی۔ سونے کی فی تولہ قیمت 1300 روپے کمی کے بعد ایک لاکھ 22 ہزار 500 روپے جبکہ 10 گرام سونا 1114 روپے کمی کے بعد ایک لاکھ 5 ہزار 24 روپے میں فروخت ہوا۔